بی جی جے پی اقتدار میں بے حیائی وبدعنوانی کا بول بالا:اکھلیش

0
5

لکھنؤ: سماجو ادی سربراہ اکھلیش یادو نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حکومت کی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اترپردیش میں بےحیائی، ظلم اور بدعنوانی پر حکومت کا کوئی کنٹرول نہیں ہے۔
مسٹر یادو نے منگل کو یہاں جاری بیان میں کہا کہ ریاست میں حکومت نامی کو ئی ادارہ نہیں ہے۔ بی جے پی حکومت میں کسان،دلت،اعلی ذات،پچھڑوں،اقلیتوں، نوجوانوں اور میڈیانمائندے تک محفوظ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ جونپور میں پولیس کی موجودگی میں دلتوں کی جانب سےپولیس پر گولیاں برسائی جاتی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ کاس گنج میں دبنگوں نے لڑکی کا ریپ کیا اور پولیس نے متاثرہ کے کنبے کو ہی ہراساں کیا۔غازی آباد میں بے خوف جرائم پیشہ افراد نے میڈیا نمائندے کو ہی قتل کردیا۔جبکہ دو دن قبل صحافی نے اپنے اوپر حملے کا شبہ کا اظہار کرتے ہوئے پولیس میں شکایت کی تھی لیکن پولیس نے کوئی کاروائی نہیں کی اور صحافی کو اپنی جان گنوانی پڑی۔
سابق وزیر اعلی نے دعوی کیا کہ کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات کے درمیان لوگوں کی مدد کرنے کے بجائے بی جے پی کے لیڈر شراب اسمگلنگ میں مشغول ہیں۔کانپور،وارانسی، گورکھپور کے بعد کشنی میں غیر قانون شراب کا کاروبار کرتے ہوئے بی جے پی کا سیکٹر کوآرڈینیٹر گرفتار کیا گیا ہے۔اقتدار کی نگرانی میں ہی تمام جرائم وقوع پذیر ہورہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ریاست میں کورونا کے تئیں بی جے پی حکومت سنجیدہ نہیں ہے۔بحران کے ان دنوں میں بھی 20سے زیادہ دن ہوگئے ہیں۔میڈیکل خدمات کے ڈائرکٹر جنرل کی پوسٹ خالی ہے۔ حکومت ایک اہل ڈائرکٹر جنرل کی تقرری نہیں کرپارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ جب ڈیپارٹمنٹ کا سربراہ ہی نہیں ہوگا تو وہ ڈپارٹمنٹ فعال طریقے سے کیسے کام کرے گا۔
اسپتالوں میں پیرامیڈیل اسٹاف اور ڈاکٹروں کی بھی کمی ہے ۔ان عہدوں پر بھی تقرری رکی ہوئی ہے۔میڈیکل شعبے کا برا حال ہے۔ اس کا احساس ٹیم ۔11کو بھی ہوگیا ہے بہتری کا کوئی سبیل نظر نہیں آرہی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here