ٹول کٹ معاملہ: نکیتا اور شانتنو پولیس تفتیش میں شامل ہوئے

0
6

نئی دہلی: یوم جمہوریہ کے دن ٹریکٹر پریڈ کے دوران راجدھانی میں ہوئے تشدد سے متعلق ٹول کٹ معاملہ کی ملزم نکیتا جیکب اور شانتنو دہلی پولیس کے سائبر سیل کے دفتر پہنچ کر جانچ میں شامل ہوئے جہاں دونوں سے پوچھ گچھ ہورہی ہے دہلی پولیس کے ایک افسر نے آج بتایا کہ ٹول کٹ کی کڑیاں جوڑنے کے لئے تفتیشی ٹیم نے نکیتا جیکب اور شانتنو کو پوچھ گچھ کے لئے طلب کیا تھا۔ دونوں آج دوارکا میں واقع سائبر سیل کے دفتر پہنچ کر جانچ میں شامل ہوئے۔ اس معاملہ کی ایک دیگر ماحولیاتی کارکن دیشا روی کو پہلے ہی گرفتار کیا جاچکا ہے۔
دہلی پولیس کا دعوی ہے کہ ٹول کٹ بناکر کسانوں کو اشتعال دلاکر تشدد پھیلانے کے پیچھے خالصتان سے منسلک تنظیموں کی سازش تھی۔ کناڈا کے پوئٹک جسٹس فاونڈیشن نے سے منسلک ایم او دھالیوال ہندستان میں کسانوں کی آڑ میں ماحول خراب کرنے کی فراق میں تھا۔پولیس کے مطابق کسانوں کو اکسانے کے لئے سازشیوں نے9 ٹول کٹ تیار کی تھی جس میں حکومت کی مخالفت کرنے کے لئے پروگرام بنایا گیا تھا۔ اسے نکیتا جیکب اور ماحولیاتی کارکن شانتنو نے تیار کیا تھا۔ اس کے بعد دشا روی نے اس سلسلہ میں ٹوئٹ کرنے کے لئے سویڈن کی ماحولیات کارکن گریٹا تھنبرگ سے بھی رابطہ کیا تھا۔
خیال رہے کہ مرکز کے تین نئے زرعی قوانین کو واپس لینے کی کسان تنظیموں کی مانگ کی حمایت میں 26جنوری کو کسانوں نے ٹریکٹر ریلی نکالی تھی اور اس دوران کسانوں اور پولیس کے مابین پرتشدد تصادم ہوا تھا۔ اس دوران کچھ مظاہرین لال قلعہ تک پہنچ گئے تھے اور انہوں نے وہاں فصیل پر کسانوں کے جھنڈے اور مذہبی جھنڈہ لگا دیا تھا۔
پولیس نے 26جنوری کو ہوئے ہوئے تشدد کے سلسلہ میں 44معاملات درج کئے ہیں۔ ان میں اب تک 143ملزم گرفتار ہوچکے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here