مئو:سابق پردھان کا دن دہاڑے گولی مار کر قتل

0
17

مئو(زمینی سچ): اترپردیش کے ضلع مئو کے سرائے لکھنسی علاقے میں جمعہ کو مجرمانہ شیبہ کے حامل ہسٹر شیٹر گرام پردھان کو نامعلوم حملہ آوروں نے گولی مار کر قتل کردیا۔
پولیس نے بتایا کہ بڑھوا گودام کے سابق پردھان اور موجودہ خاتون پر پردھان ہیمونتی دیوی کے شوہر شیلیندر یادو کی بائیک سوار تین بدمعاشوں نے دن دہاڑے گولی مار کرقتل کردیا۔ جمعہ کی صبح تقریبا 11بجے واردات کو انجام دینے کے بعد قاتل بائیک سے فرار ہوگئے۔
انہوں نے بتایا کہ گاؤں میں کمیوٹنی یبت الخلاء کی تعمیر کا کام جاری تھا۔ پردھان کے شوہر وہیں تعمیراتی کام کی دیکھ بھال کررہے تھے اس درمیان گاؤں کے باہر سے آئے موٹر سائیکل حملہ آوروں نے ان پر فائرنگ کردی۔گولی لگتے ہی پردھان اٹھ کر بھاگے لیکن حملہ آوروں نے انکا تعاقب کرتے ہوئے پیچھے سے ان پر کئی فائرنگ کردی۔شیلندر وہیں گر گئے یہ دیکھ آس پاس موجود لوگ وہاں سے بھاگ گئے۔ گولیاں مارنے کے بعد حملہ آور بھی وہاں سے فرار ہوگئے۔ زخمی شیلندر کو ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دے دیا۔
حادثے کی اطلاع ملنے کے بعد سپرنٹنڈنٹ آف پولیس سشیل گھلے اور دیگر اعلی افسران نے موقع واردات پر پہنچ کر جائزہ لیا۔تھوڑی دیر میں ڈاگ اسکواڈ بھی موقع پر پہنچ گیا اور جانچ شروع کردی گئی۔مقتول سابق پردھان شیلندر تھانہ سرائے لکھنسی کا ہسٹری شیٹر بھی تھا۔ وہ آر ٹی آئی کارکن بالگوند سنگھ، دوا کاروباری گھوتا گپتا قتل معاملے میں ملزم تھا۔اس پر دو قتل سمیت 10مقدمے درج تھے۔ ابھی کچھ مہینے قبل ہی وہ جیل سے رہا ہوکر باہر آیا تھا۔
متوفی کے اہل خانہ نے قتل کا الزام بال گوند اور گھورا کے بیٹوں پر عائد کیا ہے وہیں پولیس نے ایک ملزم کو حراست میں بھی لیا ہے۔ واردات کے بعد سے ہی ضلع میں مختلف مقامات پر گاڑیوں کی چیکنگ کر کے بدمعاشوں کی تلاش جارہی ہے۔لیکن خبر لکھے جانے تک پولیس کو کوئی سراغ نہیں ملا تھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here