ملک میں کورونا پازیٹیو مریضوں کی تعداد 606ہوئی

0
11

نئی دہلی، 25مارچ (یو این آئی) گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس ’کووڈ 19‘ کے 100سے زیادہ نئے معاملات سامنے آئے ہیں اور اب تک اس سے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 606ہوگئی ہے جن میں 563 ہندستانی اور 43غیرملکی شہری ہیں۔ کورونا وائرس کے قہرسے اب تک ملک میں 11 لوگوں کی موت ہوگئی ہے۔مہاراشٹر میں گزشتہ24 گھنٹوں میں کورونا وائرس سے انفیکشن کے سب سے زیادہ معاملات سامنے آئے ہیں۔ وہاں کل تک 86لوگ اس سے متاثر پائے گئے تھے لیکن آج اس مہلک وائرس کی زد میں 42لوگ مزید آگئے۔ ریاست میں اب تک 128لوگ اس سے متاثر پائے گئے ہیں۔کیرالہ میں بھی کورونا وائرس تیزی سے پیر پھیلا رہا ہے۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 22 نئے لوگ متاثر پائے گئے ہیں۔ وہاں اب تک اس وبا سے متاثرین کی تعداد 109تک پہنچ گئی ہے۔
وزارت صحت کے جوائنٹ سکریٹری لو اگروال نے بدھ کو یہاں پریس کانفرنس میں بتایا کہ کورونا وائرس کی جانچ کے لئے 118سرکاری لیباریٹریاں پوری طرح تیار ہیں اور ان کی ٹیسٹ صلاحیت یومیہ 12ہزار نمونوں کی جانچ کرنا ہے۔ اس کے علاوہ نجی شعبہ کی 29لیباریٹریوں کو بھی کورونا وائرس کی جانچ کی اجازت دے دی گئی ہے اور ان کے 16ہزار کلکشن سنٹر ہیں جو انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (آئی سی ایم آر)کے طبی پیمانوں کے مطابق کام کریں گی۔
انہوں نے ایک بار پھر واضح کیا کہ لوگ ہائیڈرو کلوروکوین نامی دوا کا استعمال کررہے ہیں، لیکن اس دوا کا سائڈ افیکٹ ہے۔ ہم نے کسی کوبھی اس دوا کا استعمال نہیں کرنے کیلئے کہا ہے اور یہ دوا صرف ان ہی ڈاکٹروں کو دی جارہی ہے جو کورونا وائرس سے متاثر مریضوں کا علاج کررہے ہیں یا وہ لوگ جن کے رشتہ دار کورونا وائرس سے پازیٹیو پائے گئے ہے اور وہ انکی تیمارداری کررہے ہیں۔ مسٹر اگروال نے کہا کہ اگر عام آدمی بغیر کسی ڈاکٹر ی مشورہ کے اس دوا کو لیگا تو اس کے مضر اثرات ہوسکتے ہیں۔یہ دوااحتیاط کے طورپر ’پری وینٹیو‘ میڈیسن کے طورپر دی جاتی ہے۔ یہ دوا صرف ان کے لئے ہے جو طبی شعبہ سے منسلک ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here