بابری مسجد انہدام:اڈوانی کا بیان درج، خود کو بے قصور بتایا

0
4

لکھنؤ:بی جے پی کے سینئر لیڈر و بابری مسجد انہدام کے ملزم لال کرشن اڈوانی نے جمعہ کو اس ضمن میں اسپیشل سی بی آئی کورٹ کے سامنے اپنا بیان درج کراتے ہوئے خود کو بےقصور بتایا۔
اپنا بیان درج کرانے کے لئے مسٹر اڈوانی دہلی سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ خصوصی عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔ پراسیکیوشن کی لگاتار چار گھنٹے کی جرح میں اڈوانی نے اپنے اوپر بابری مسجد کی مسماری یا اس کے انہدام کی سازش کرنے جیسے تمام الزامات سے انکار کرتے ہوئے اپنے اوپر لگے الزامات کو سیاسی سازش کا پیش خیمہ قرار دیا۔
دوران جرح پراسیکیوشن نے مسٹر اڈوانی سے بابری مسجد مسماری کے ضمن میں تقریبا 1000سوالات پوچھے۔اڈوانی کا بیان سی بی آئی کی اسپیشل کورٹ کے جج ایس کے یادو کے سامنے سی آر پی سی کی دفعہ 313کے تحت درج کیا گیا۔
مسٹر اڈوانی 32ملزمین میں سے 29ویں ملزم ہیں جنہوں نے اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔اس ضمن میں ایک دوسرے ملزم ستیش پردھان 28جولائی کو اپنا بیان درج کرائیں گے۔قابل ذکر ہے کہ سپریم کورٹ کی ہدایت کے بعد خصوصی عدالت کو 31اگست تک اس ضمن میں اپنا فیصلہ سنانا ہے۔ عدالت اس معاملے میں لگاتار سماعت کررہی ہے۔ اس سے پہلے بی جے پی لیڈر مرلی منوہر جوشی نے اپنا بیان درج کرایاتھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here