پاکستان میں ٹرین حادثہ، 20سکھ عقیدت مندوں کی موت، دس زخمی

0
4

اسلام آباد: پاکستان کے پنجاب صوبہ کے شیخو پورہ کے نزدیک جمعہ کو ایک خوفناک حادثہ میں ایک مسافر ٹرین سے عقیدت مندوں سے بھری ایک وین کے ٹکراجانے سے کم از کم 20سکھ مسافروں کی موت اور دس دیگر زخمی ہوگئے۔ ریلوے کے حکام نے بتایا کہ انتظامیہ اور راحت و بچاو عملہ نے پہنچ کر زخمیوں کو نزدیکی اسپتال پہنچایا۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق وین میں سوار بیشتر سکھ مسافر تھے جو ننکانہ صاحب کے سفر سے واپس آرہے تھے۔ سکھ عقیدت مند شیخو پورہ ضلع میں گردوارہ سچا سودا سے واپس آرہے تھے۔ وہ مذہبی رسومات ادا کرنے گئے تھے۔ یہ حادثہ شیخو پورہ کے نزدیک ایک ایسی ریلوے کراسنگ کے نزدیک ہوا جہاں کوئی گیٹ نہیں تھا۔ اس حادثہ میں شاہ حسین ایکسپریس ٹرین پر سوار کئی مسافر بھی زخمی ہوئے ہیں۔ ریلوے کے وزیر شیخ راشد نے حکام کو اس حادثہ کے لئے ذمہ دار لوگوں کے خلاف فوری طورپر کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے جمعہ کو پاکستان کے پنجاب صوبہ میں ٹرین حادثہ میں سکھ عقیدت مندوں کی موت پر گہرا دکھ ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے اس حادثہ پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے ٹوئٹ کیا کہ پاکستان میں ٹرین حادثہ میں سکھ عقیدت مندوں کی موت سے بہت دکھ ہوا۔ دکھ کے اس وقت میں مرنے والوں کے کنبوں اور دوستوں کے ساتھ میری ہمدردی ہے۔ اس واقعہ میں زخمی ہوئے عقیدت پاکستان کے صدر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان نے بھی اس حادثہ میں لوگوں کے مارے جانے پر گہرا دکھ ظاہر کیا اور یقین دلایا کہ زخمیوں کے بہتر علاج کا نتظام کیا جائے گا۔ مسٹر خان نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ شیخو پورہ کے نزدیک ایک ریلوے کراسنگ پر آج دوپہر ہوئے حادثہ سے گہرا دکھ ہوا جس کے نتیجہ میں کم از کم 20لوگ مارے گئے جن میں خاص طورپر سکھ عقیدت مند شامل ہیں جو ننکانہ صاحب سے واپس آرہے تھے۔ میں نے زخمیوں کو مناسب طبی سہولیات دستیاب کرائے جانے کی ہدایت دی ہے۔
خیال رہے کہ پاکستان میں ٹرین حادثہ عام بات ہے۔ ریلوے سروس میں بدعنوانی، بد انتظامی اور سرمایہ کاری کی کمی کے سبب دہائیوں سے گراوٹ جاری ہے۔
قومی اسمبلی کی اسٹینڈنگ کمیٹی نے حال ہی میں انکشا ف کیا تھا کہ ملک میں 2014کے بعد سے اب تک 384ٹرین حادثات ہوچکے ہیں۔
مندوں کی جلد صحت یاب ہونے کی خواہش کرتا ہوں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here