سونیا کی میڈیا کے اشتہارات روکنے کے مشورہ کی مخالفت میں اتری صحافیوں تنظیمیں

0
10

نئی دہلی / حیدرآباد، 9 اپریل : صحافیوں کی قومی تنظیموں نے کانگریس صدر سونیا گاندھی کے وزیر اعظم نریندر مودی کو د یے گئے اس مشورہ پر عدم اطمینان ظاہر کیا ہے جس میں انہوں نے كورونا وائرس ’ كووڈ -19‘ سے لڑنے کے لئے مناسب فنڈ بچانے کے واسطے میڈیا کو فراہم کئے جانے والے اشتہارات پر روک لگانے کی درخواست کی تھی ۔ پریس ایسوسی ایشن، انڈین جرنلسٹ یونین، نیشنل یونین آف جرنلسٹس اور ورکنگ نیوز کیمرہ مین ایسوسی ایشن نے جمعرات کو ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ اگر ایسا کیا گیا تو اس اہم وقت میں میڈیا کے کردار کو کمتر ہانکنا ہو گا ۔ محترمہ گاندھی کی جانب سے ایسا مشورہ دیا جانا صدمہ پہنچا نے والا ہے ۔ اس بیان میں میڈیا تنظیموں نے اس مشورہ کو پوری طرح بے بنیا د قرار دیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ اس وبا کی وجہ سے میڈیا صنعت بالخصوص پرنٹ میڈیا پر اقتصادی دباؤ کافی بڑ گیا ہے اور اس کی وجہ سے کئی اخبارات نے اپنی پبلشنگ بند کر دی ہے ۔ اس بیان پر پریس ایسوسی ایشن کے صدر جئے شكر گپتا اور جنرل سیکریٹری سی کے نائیک ،انڈین جرنلسٹس یونین کے صدر کے سری نواس ریڈی اور جنرل سیکریٹری بلوندر سنگھ جموں، نیشنل یونین آف جرنلسٹس انڈیا کے صدر راس بہاری اور جنرل سیکریٹری پرسنا موہنتی، ورکنگ نیوز کیمرہ مین ایسوسی ایشن کے صدر ایس این سنہا اور جنرل سیکرٹری سندیپ شنکر نے دستخط کئے ہیں ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس بحران کی وجہ سے ملک میں بڑی تعداد میں صحافی اپنا روزگار گنوا بیٹھے ہیں ۔ اس گھڑی میں میڈیا کو فراہم کئے جانے والے اشتہارات روکنے سے یہ صنعت مکمل طور پر ختم ہو جائے گی، جس کی اس وقت كووڈ -19 سے لڑنے کے لئے بہت ضرورت ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here